Monday - 2018 Sep 24
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 79228
Published : 23/7/2015 20:8

ایران کی جہاز رانی کا انحصار جی پی ایس سسٹم پر نہیں

اسلامی جمہوریہ ایران کی فوج کے خاتم الانبیا ایئر ڈیفنس ہیڈکوارٹر کے سربراہ نے کہا ہے کہ ایران کی مسلح افواج کے سسٹمز، جی پی ایس سسٹم جیسی ٹیکنالوجی سے وابستہ نہیں ہیں۔ خاتم الانبیا ایئر ڈیفنس ہیڈکوارٹر کے سربراہ بریگیڈیئر جنرل فرزاد اسماعیلی نے ایران کی فوجی تنصیبات پر حملے کی دھمکی پر مبنی امریکی حکام کے بیانات پر اپنا رد عمل ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ ایران کے میزائل اور جہاز رانی کی ایک خصوصیت، ان کا ایران میں ہی، تیار کیا جانا ہے۔ بریگیڈیئر جنرل فرزاد اسماعیلی نے مزید کہا کہ جو لوگ یہ خیال کرتے ہیں کہ وہ جی پی ایس میں خلل ڈال کر ہمارے لئے مشکلات پیدا کر سکتے ہیں وہ سخت غلط فہمی کا شکار ہیں۔ بریگیڈیئر جنرل فرزاد اسماعیلی نے ایران میں تیار نہ کئے جانے والے بحری فوجی جہازوں کے استعمال کے بارے میں کہا کہ یہ ایک فوجی اصول ہے کہ تمام صلاحیتوں اور ٹیکنالوجیوں سے بھرپور استفادہ کرنا چاہئے۔ خاتم الانبیا ایئر ڈیفنس ہیڈکوارٹر کے سربراہ کا مزید کہنا تھا کہ اگر دشمن اسلامی جمہوریہ ایران کے بحری جہاز رانی سسٹم میں خلل ڈالنے کی کوشش کرے گا تو ایران ایک سسٹم کے متبادل کے طور پر دوسرا سسٹم بروئے کار لانے کی صلاحیت رکھتا ہے۔ فرزاد اسماعیلی نے اسلامی جمہوریہ ایران کی مسلح افواج کے ہاتھوں امریکا کے آر کیو ایک سو ستّر اور اسرائیل کے ہرمس ڈرون طیارے کو اتارنے کی کارروائیوں کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ یہ وہ، صلاحیتیں ہیں کہ جن کا ایران نے لوہا منوایا ہے اور دشمنوں کو یہ بات جان لینی چاہئے کہ یہ صلاحیتیں تمام دشمنوں کے لئے زہر میں بجھے ہوئے تیر کی مانند ہیں۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2018 Sep 24