جمعه - 2019 مارس 22
ہندستان میں نمائندہ ولی فقیہ کا دفتر
Languages
Delicious facebook RSS ارسال به دوستان نسخه چاپی  ذخیره خروجی XML خروجی متنی خروجی PDF
کد خبر : 79915
تاریخ انتشار : 1/8/2015 14:12
تعداد بازدید : 13

فلسطینی بچے کی شہادت، عالمی سطح پر مذمت

اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل بان کی مون نے صیہونی حکومت کو ایک فلسطینی بچے کو زںدہ جلائے جانے کا ذمہ دار قرار دیا ہے-
اطلاعات کے مطابق اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل بان کی مون نے صیہونی بستیوں کے انتہا پسندوں کے ہاتھوں ایک فلسطینی بچے کو زندہ جلائے جانے پر رد عمل ظاہر کرتے ہوئے اس کے لئے صیہونی حکومت کو ذمہ دار قرار دیا ہے- بان کی مون نے فلسطینی بچے کے قتل کو دہشت گردی قرار دیتے ہوئے انتہا پسندوں کے آئے دن کے تشدد پر ان کو سزا دینے میں صیہونی حکومت کی کوتاہی کو اس ہولناک واقعے کا سبب بتایا ہے- واضح رہے کہ صیہونی انتہا پسندوں نے جمعے کے روز غرب اردن کے ایک گاؤں پر پیٹرول بموں سے حملہ کر کے فلسطینیوں کے دو گھروں کو آگ لگا دی تھی- اس حملے میں اٹھارہ ماہ کا ایک فلسطینی بچہ زندہ جل گیا تھا اور اس کے والدین اور چار سالہ بھائی شدید زخمی ہو گئے تھے- ادھر امریکا، برطانیہ، جرمنی، اٹلی اور اسپین سمیت بہت سے ملکوں نے غرب اردن میں جاری صیہونی حکومت کے جرائم کی مذمت کی ہے- امریکی وزارت خارجہ نے جمعے کے روز ایک بیان میں اس اقدام کی مذمت کرتے ہوئے اسرائیل سے اس واقعے کے ذمہ داروں کو کیفر کردار تک پہنچانے کا مطالبہ کیا- برطانوی نائب وزیر خارجہ نے انتہا پسند اور نسل پرست صیہونیوں کے جرائم کو ایک دہشت گردانہ عمل قرار دیا اور ان کی مذمت کی- جرمنی کی وزارت خارجہ نے بھی ایک بیان جاری کر کے صیہونی بستیوں کے باشندوں کے اس اقدام کی شدید مذمت کی ہے- جرمن وزارت خارجہ نے صیہونیوں کے اس اقدام کو ہولناک اور حیران کن قرار دیا ہے- اٹلی کی وزارت خارجہ نے اپنے بیان میں غرب اردن میں فلسطینی خاندانوں کے خلاف انتہا پسند صیہونیوں کے جرائم کی مذمت کی ہے اور ان غیر انسانی جرائم کے ذمہ داروں کو گرفتار اور سزا دئیے جانے کا مطالبہ کیا ہے- اسپین کی حکومت نے بھی اس سلسلے میں ایک بیان جاری کیا ہے- اس بیان میں اسپین کی حکومت نے متاثرہ فلسطینی خاندان کو تعزیت پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ فلسطینی بچے کا قتل مقبوضہ فلسطین میں ناقابل قبول صورت حال کا ثبوت ہے- اسپین کی حکومت کے بیان میں آیا ہے کہ ایک پائیدار فلسطینی حکومت سمیت پرامن بقائے باہمی کی بنیاد پر اس کشیدگی کی راہ حل تلاش کرنے کے لئے فریقین کے درمیان مذاکرات پھر سے شروع کئے جانے کی ضرورت ہے-


نظر شما



نمایش غیر عمومی
تصویر امنیتی :