Thursday - 2018 June 21
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 80043
Published : 3/8/2015 20:31

افغانستان: امن مذاکرات جاری رکھنے پر تاکید

افغان صدر ہاؤس نے ایک بیان میں کہا ہے کہ حکومت کابل افغانستان کے خلاف برسر پیکار گروہوں اور طالبان کے ساتھ مذاکرات کرے گی۔
افغان صدر ہاؤس کی جانب سے جاری ہونے والے بیان میں کہا گیا ہے کہ حکومت کابل افغانستان کے خلاف برسر پیکار گروہوں اور طالبان کو ہی "مخالف مسلح گروہ" جانتی ہے اور وہ صرف انہی گروہوں کے ساتھ مذاکرات کرے گی۔ اس بیان میں مزید آیا ہے کہ کابل حکومت عوام کی منتخب شدہ اور واحد نمائندہ کی حیثیت سے افغانستان کے سیاسی نظام کے متوازی اور اس سے متضاد کسی بھی نظام کو قبول نہیں کرے گی اور اس کے مقابلے میں پوری طاقت کے ساتھ کھڑی ہو گی۔ اس بیان میں مزید آیا ہے کہ افغانستان کی حکومت ہر اس کوشش اور رائے کی مخالف ہے جس کے ذریعے طالبان کے ساتھ امن مذاکرات کی مخالفت کی گئی ہو اور وہ اس طرح کی ہر کوشش اور رائے کی مذمت کرتی ہے۔ واضح رہے کہ حال ہی میں طالبان سے منسوب ایک ویب سائٹ نے ایک آڈیو بیان جاری کر کے دعوی کیا تھا کہ طالبان کے نئے لیڈر ملا اختر محمد منصور نے امن مذاکرات کو "دشمنوں کا پروپیگنڈہ" قرار دیا ہے اور کہا ہے کہ طالبان افغانستان میں جنگ جاری رکھیں گے۔ طالبان کے سابق سرغنے ملا محمد عمر کی ہلاکت کے بعد طالبان کے متعدد کمانڈروں نے ملا اختر محمد منصور کو اس کا جانشین منتخب کئے جانے کی مخالفت کی ہے۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Thursday - 2018 June 21