Tuesday - 2018 Sep 25
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 80200
Published : 5/8/2015 15:37

عراق: داعش کے ہاتھوں دو ہفتے میں دو ہزار شہری قتل

عراق کے شہر موصل میں داعش دہشت گرد گروہ نے گذشتہ دو ہفتوں کے دوران دو ہزار افراد کا قتل عام کیا ہے۔ رپورٹ کے مطابق عراق کردستان کی ایک جماعت، کردستان وطن پارٹی کے میڈیا امور کے سربراہ غیاث سورجی کا کہنا ہے کہ داعش سے وابستہ دہشت گردوں نے گذشتہ دو ہفتوں کے دوران صوبہ نینوا کے مرکز موصل کے دو ہزار شہریوں کو قتل کر دیا۔ غیاث سورجی نے کہا کہ قتل ہونے والے زیادہ تر افراد، عراقی فوج سے وابستہ یا سرکاری ملازم تھے۔ انہوں نے کہا کہ داعش سے وابستہ دہشت گردوں نے ان افراد کے ناموں کی فہرست تیار کرکے مشرقی موصل کے سومر علاقے کے پولیس اسٹیشن کی دیوار پر نصب کر دی ہے۔ کردستان وطن پارٹی کے میڈیا امور کے سربراہ نے کہا کہ داعش نے خوف اور دہشت کی فضا قائم کر رکھی ہے تاکہ کسی بھی قسم کی اجتماعی بغاوت کا امکان باقی نہ رہ سکے۔ دوسری جانب عراقی پارلیمنٹ کے خواتین اور بچوں کے کمیشن نے پیر کے روز اعلان کیا ہے کہ گذشتہ موسم گرما میں موصل پر داعش کے قبضے سے لیکر اب تک اس گروہ کے افراد، ایک ہزار چھے سو ایزدی خواتین کو اغوا کر چکے ہیں۔ ادھر عراقی فوج نے اعلان کیا ہے کہ عوامی خفیہ اطلاعات کی بنیاد پر موصل شہر میں واقع داعش کے اہم ترین مرکز کو بمباری کرکے تباہ کر دیا گیا۔ یہ مقام گاڑیوں میں بم نصب کرنے کا اصل مرکز تھا۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Tuesday - 2018 Sep 25