Wed - 2018 Dec 12
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 80201
Published : 5/8/2015 15:41

مشرق وسطی اور بلقان کو امن و سکون کا گہوارہ ہونا چاہئے

اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر نے کہا ہے کہ مشرق وسطی اور بلقان سمیت دنیا کے مختلف علاقوں میں امن و امان کے قیام کی اشد ضرورت ہے- ایران کے صدر ڈاکٹر حسن روحانی نے منگل کے دن تہران میں صربیہ کے وزیر خارجہ سے ملاقات میں کہا ہے کہ تمام ممالک کو تشدد اور انتہا پسندی سے پاک دنیا وجود میں لانے کی بھرپور کوشش کرنا چاہئے- صدر مملکت ڈاکٹر حسن روحانی نے کہا کہ ایران، تشدد اور انتہا پسندی کے خلاف ہے اور نسلوں کے فاصلے اور انتہا پسندی سے امن وامان کے قیام میں کوئی مدد نہیں مل سکتی- ڈاکٹر حسن روحانی نے ایران اور گروپ پانچ جمع ایک کے درمیان ایٹمی مذاکرات کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ ان مذاکرات سے ثابت ہو گیا کہ علاقے اور عالمی مسائل کو بھی منطق اور مذاکرات کے ذریعے حل کیا جا سکتا ہے- صدر مملکت نے صربیہ کے ساتھ خاص طور سے اقتصادی شعبوں میں تعلقات کو فروغ دینے پر ایران کی آمادگی کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ سائنسی اور ثقافتی شعبوں، بالخصوص ایران اور صربیہ کے پر کشش تاریخی اور قدرتی مناظر کے پیش نظر سیاحتی شعبے میں بھی، تہران اور بلگراڈ کے تعلقات کو فروغ حاصل ہونا چاہئے- اس ملاقات میں صربیہ کے نائب وزیر اعظم اور وزیر خارجہ ایوتسا داچیچ نے بھی تمام شعبوں خاص طور سے اقتصادی شعبے میں ایران کے ساتھ تعلقات میں توسیع سے متعلق اپنے ملک کی دلچسپی کا اظہار کیا- انھوں نے کہا کہ صربیہ، انرجی، تیل اور گیس کے شعبوں میں بھی ایران کے ساتھ تعاون کا خواہاں ہے-


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Wed - 2018 Dec 12