Thursday - 2018 Oct. 18
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 80233
Published : 6/8/2015 20:59

روس شام میں اپنی فوج نہیں بھیجے گا

روس کے ایک اعلی عہدے دار نے اعلان کیا ہے کہ ان کا ملک داعش کا مقابلہ کرنے کے لئے کوئی فوجی شام نہیں بھیجے گا۔

پریس ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق روسی صدر کے ترجمان دیمیتری پیشکوف نے کہا ہے کہ نہ تو کوئی روسی فوجی شام بھیجا جائے گا نہ ہی اس سلسلے میں کوئی بات ہوئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ شام کے صدر نے داعش سے وابستہ دہشت گردوں کا مقابلہ کرنے کے لئے روسی صدر ولادیمیر پوتین کو ایسی کوئی درخواست پیش نہیں کی ہے۔ دیمیتری پیشکوف نے شام میں امریکی منصوبوں پر سخت نکتہ چینی کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ اور بعض دیگر ملکوں نے اس ملک کے بحران کو مزید پیچیدہ بنا دیا۔ روسی صدر کے ترجمان نے کہا کہ امریکیوں نے داعش دہشت گردوں کا مقابلہ کرنے میں شام کے سامنے رکاوٹیں کھڑی کر رکھی ہیں۔ اس سے قبل روس کے وزیر خارجہ نے بھی شام میں امریکہ کے کردار کو بدامنی کا باعث قرار دیا تھا۔ یاد رہے کہ شام کو گذشتہ چار برسوں سے مغرب اور بعض عرب ممالک کے تربیت یافتہ دہشت گردوں کی جارحیت اور سفاکانہ اقدامات کا سامنا ہے۔ رپورٹوں کے مطابق اب تک دہشت گردوں کے اقدامات کے نتیجے میں گیارہ ہزار پانچ سو بچے سمیت دو لاکھ تیس ہزار شامی شہری مارے جا چکے ہیں۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Thursday - 2018 Oct. 18