Friday - 2018 Nov 16
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 80941
Published : 18/8/2015 10:3

نگرانی صرف اضافی پروٹوکول کے مطابق: عراقچی

اسلامی جمہوریہ ایران کے نائب وزیر خارجہ سید عباس عراقچی نے کہا ہے کہ ویانا ایٹمی معاہدہ اضافی پروٹوکول کے دائرے میں انجام پایا ہے- ارنا کی رپورٹ کے مطابق ایران کے نائب وزیر خارجہ سید عباس عراقچی نے کہا کہ ویانا ایٹمی معاہدہ اضافی پروٹوکول کے دائرے میں انجام پایا ہے اور محدودیت اور نگرانی اسی پروٹوکول کے مطابق ہے، اس سے الگ نہیں ہے- عباس عراقچی نے ویانا ایٹمی معاہدے میں مذکور ایران کی ایٹمی سرگرمیوں کی نگرانی کے طریقہ کار کے بارے میں کہا کہ ویانا ایٹمی معاہدے کی کسی بھی شق میں اضافی پروٹوکول سے زیادہ نگرانی کا ذکر نہیں ہے- انہوں نے ایٹمی توانائی کی عالمی ایجنسی، آئی اے ای اے، کے انسپکٹروں کی طرف سے جاسوسی کئے جانے کے امکان کے بارے میں کہا کہ آئی اے ای اے ایران روانگی سے پہلے اپنے انسپکٹروں کے بارے میں ہمیں بتاتی ہے پھر ایران کے سیکورٹی ادارے ان انسپکٹروں کے بارے میں چھان بین کرتے ہیں- انہوں نے کہا کہ متعلقہ اداروں کی طرف سے مثبت جواب ملنے کے بعد ہی وزارت خارجہ ان کو ویزا جاری کرتی ہے- عباس عراقچی نے کہا کہ بنابریں آئی اے ای اے کی طرف سے ایران آنے والا کوئی بھی انسپکٹر صرف انہیں افراد میں سے ہو سکتا ہے جن کی تائید پہلے سے ایران کر چکا ہو، ان افراد سے ہٹ کر کوئی بھی شخص انسپکٹر کی حیثیت سے ایران نہیں آ سکتا-


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Friday - 2018 Nov 16