Monday - 2018 Oct. 22
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 81111
Published : 21/8/2015 10:18

شام کے بحران کو فوجی طریقے سے حل نہیں کیا جا سکتا

اسلامی جمہوریہ ایران کی پارلیمنٹ میں خارجہ پالیسی اور قومی سلامتی کمیشن کے سربراہ نے کہا ہے کہ شام کے بحران کو فوجی طریقے سے حل نہیں کیا جا سکتا ہے۔ علاء الدین بروجردی نے لبنان کی العہد ویب سائٹ کے ساتھ گفتگو کے دوران امریکا کو شام میں دہشت گردوں کا حامی قرار دیتے ہوئے کہا کہ شام کے سلسلے میں امریکیوں کا منصوبہ ناکام ہو گیا ہے۔ علاء الدین بروجردی نے مزید کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران نے شام کا بحران شروع ہونے کے وقت سے ہی اس بات پر زور دیا ہے کہ اس بحران کو فوجی طریقے سے حل نہیں کیا جا سکتا ہے لیکن امریکا اور اس کے یورپی اور علاقائی اتحادی، فوجی حل کی حمایت کرتے تھے، ان ملکوں نے دہشت گردوں کی حمایت کی اور ان کو اسلحہ فراہم کیا۔ اسلامی جمہوریہ ایران کی پارلیمنٹ میں خارجہ پالیسی اور قومی سلامتی کمیشن کے سربراہ علاء الدین بروجردی نے شام میں یورپ خصوصا امریکا کے فوجی منصوبوں کی ناکامی کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ شام کے خلاف فوجی کارروائی کے سلسلے میں امریکا اور اس کے اتحادیوں کی ناکامی آج سابق موقف سے ان کی پسپائی کا سبب بنی ہے اور وہ اس بحران کو سیاسی طریقے سے حل کرنے پر مائل نظر آتے ہیں۔ علاء الدین بروجردی کا مزید کہنا تھا کہ شام کا بحران صرف شام کے گروہوں کے باہمی مذاکرات کے ذریعے ہی حل ہو سکتا ہے کیونکہ اس ملک کی تقدیر کا فیصلہ جنیوا یا کسی بھی دوسری جگہ نہیں کیا جا سکتا ہے۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2018 Oct. 22