Wed - 2018 August 15
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 81273
Published : 23/8/2015 20:25

اقوام متحدہ آل خلیفہ حکومت کے خلاف ٹھوس اقدام کرے

انسانی حقوق کے لئے کام کرنے والی تنظیموں نے اقوام متحدہ سے آل خلیفہ حکومت کے خلاف ٹھوس اقدام کا مطالبہ کیا ہے- اطلاعات کے مطابق انسانی حقوق کے لئے کام کرنے والی چودہ تنظیموں نے بحرین میں انسانی حقوق کی خلاف ورزی جاری رہنے پر اپنے ردعمل میں اقوام متحدہ سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ آل خلیفہ حکومت کے خلاف ٹھوس اقدام کرے- ان تنظیموں نے اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل کے رکن ممالک کے نمائندوں کو ایک مشترکہ خط ارسال کیا ہے- اس خط میں بحرین میں حکومت کی طرف سے آزادی اظہار اور احتجاجی مظاہروں پر پابندی کی طرف اشارہ کرتے ہوئے انسانی حقوق کی پامالی پر مبنی آل خلیفہ حکومت کے اقدامات روکے جانے کا مطالبہ کیا گیا ہے- انسانی حقوق کی تنظیموں نے بحرین کی قومی جمعیت الوفاق اسلامی کے سیکریٹری جنرل شیخ علی سلمان، جمعیت الوفاق کی سیکریٹریٹ کے رکن ماجد میلاد اور جمعیت وعد کے سابق سیکریٹری جنرل ابراہیم شریف سمیت بحرین کی قومی اور سیاسی شخصیات کی گرفتاریوں کی طرف اشارہ کرتے ہوئے اقوام متحدہ کی طرف سے بحرین میں انسانی حقوق کی مسلسل پامالی کی تحقیقات کے لیے ایک فیکٹ فائنڈنگ کمیٹی کی تشکیل کا بھی مطالبہ کیا ہے- انسانی حقوق کی چودہ تنظیموں کے مشترکہ خط میں کہا گیا ہے کہ سوشل میڈیا پر اپنے نظریات یا اطلاعات کی اشاعت کی وجہ سے بحرین میں انسانی حقوق کی تنظیموں اور سیاسی جماعتوں کے کارکنوں کے خلاف کارروائی کی جاتی ہے- خط میں کہا گیا ہے کہ سیاسی قیدیوں کی فوری آزادی اور قومی آشتی و سماجی انصاف کے حصول کے لئے مذاکرات کی غرض سے مناسب ماحول پیدا کرنے کے لئے آل خلیفہ حکومت کے خلاف دباؤ بنانا ضروری ہے- قابل ذکر ہے کہ بحرین میں دو ہزار گیارہ سے آل خلیفہ حکومت کے خلاف عوامی احتجاج کا سلسلہ بدستور جاری ہے- بحرینی عوام اپنے ملک میں سیاسی اصلاحات کے خواہاں ہیں-


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Wed - 2018 August 15