Tuesday - 2018 Oct. 16
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 81407
Published : 25/8/2015 11:57

ایٹمی معاہدہ ایران اور برطانیہ کے تعلقات میں بہتری کا پیش خیمہ

صدر مملکت ڈاکٹر حسن روحانی نے ایٹمی معاہدے کو ایران اور برطانیہ کے تعلقات میں بہتری کا پیش خیمہ قرار دیا ہے۔ برطانوی وزیر خارجہ فلپ ہیمنڈ نے پیر کے دن تہران میں اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر ڈاکٹر حسن روحانی سے ملاقات کی۔ صدر مملکت ڈاکٹر حسن روحانی نے اس ملاقات میں ایٹمی معاہدے کو ایران اور برطانیہ کے تعلقات میں بہتری کا پیش خیمہ قرار دیا ہے۔ صدر مملکت نے تہران اور لندن میں اسلامی جمہوریہ ایران اور برطانیہ کے سفارت خانوں کے دوبارہ کھولے جانے اور دونوں ممالک کے سیاسی تعلقات اور باہمی تعاون میں توسیع کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ دونوں ممالک کے حکام پر دو طرفہ اعتماد کی بنیاد پر باہمی تعلقات کی تعمیرنو اور ان کو قابل قبول سطح پر پہنچانے کے سلسلے میں اہم ذمہ داری عائد ہوتی ہے۔ صدر مملکت ڈاکٹر حسن روحانی نے کہا کہ ایرانی عوام اپنے ملک کے امور میں اغیار کی مداخلت کو فراموش نہیں کر سکے ہیں۔ ڈاکٹر حسن روحانی نے مزید کہا کہ اگرچہ تاریخ سے متعلق کسی قوم کے فیصلوں کو قلیل مدت میں تبدیل نہیں کیا جاسکتا ہے لیکن اس کے باوجود ہمیشہ ماضی کو مدنظر رکھ کر ہی زندگی نہیں گزارنی چاہئے بلکہ مستقبل کو پیش نظر رکھ کر آگے بڑھنا چاہئے۔ صدر مملکت نے دہشت گردی اور انتہا پسندی سے مقابلے کو عصر حاضر کی ایک اہم ضرورت قرار دیتے ہوئے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران دنیا میں بے گناہ انسانوں کے قتل عام کا مخالف اور اس کی روک تھام کا خواہاں ہے۔ صدر مملکت ڈاکٹر حسن روحانی نے علاقائی اور عالمی مسائل کے بارے میں کہا کہ آج شام، عراق، افغانستان، لبنان، بحرین اور یمن سمیت خطے کو بہت سے اہم مسائل کا سامنا ہے اور ان مسائل کو مذاکرات اور مشترکہ اقدامات کے ذریعے پرامن طریقے سے حل کیا جاسکتا ہے۔ برطانوی وزیر خارجہ فلپ ہیمنڈ نے بھی اس ملاقات میں اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر کے ساتھ ملاقات پر اپنی مسرت کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ برطانیہ کی حکومت ایٹمی معاہدے میں مندرج اپنے وعدوں کی پابندی کرے گی۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Tuesday - 2018 Oct. 16