Sunday - 2018 Sep 23
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 83136
Published : 10/9/2015 11:45

داعش کے خلاف ہندوستان کے مسلم علماء کا فتوی

ہندوستان کے مسلم علماء نے داعش دہشت گرد گروہ کے جارحانہ اقدامات پر ردعمل ظاہر کرتےہوئے اس گروہ کے خلاف فتوی جاری کیا ہے- تسنیم نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق ہندوستان کے مسلم علماء اور مذہبی رہنماؤں نے داعش دہشت گرد گروہ کے خلاف اپنے فتوے کا اعلان کرتےہوئے کہا ہے کہ اسلام، قتل و خونریزی اور مقدسات کی توہین کرنے والا مذہب نہیں ہے- ہندوستان کے مسلم علماء اور مذہبی رہنماؤں نے اس فتوے کو دنیا کے تمام سربراہان مملکت اور اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل بان کی مون کو بھی ارسال کیا ہے- مذکورہ فتویٰ ممبئی سے تعلق رکھنے والے عالم محمد منظر حسین اشرفی مصباحی نے دیا، جس کی توثیق ہندوستان کے دیگر علماء نے بھی کردی ہے۔ ہندوستان ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق داعش کے خلاف فتوے پر ہندوستان کے 1050 مذہی اسکالرز اور علماء نے دستخط کیے ہیں اور یہ پہلی بار ہے کے داعش کے خلاف اتنی بڑی تعداد میں مذہبی رہنماؤں کی جانب سے فتویٰ جاری کیا گیا ہے۔ فتوے پر دہلی کی جامع مسجد کے شاہی امام سید احمد بخاری، درگاہ اجمیر شریف اور نظام الدین اولیاء کے گدی نشینوں، ممبئی رضا اکیڈمی، ممبئی جمیعت علماء اور علماء کونسل کے تحت چلنے والے مدارس کے سربراہان نے دستخط کئے ہیں۔ داعش کے خلاف ہندوستان کے مسلم علماء نے یہ فتوی ایک ایسے وقت میں جاری کیا ہے کہ جب ایک مدت سے اس دہشت گرد گروہ نے ہندوستان میں جوانوں کو اپنی جانب کھیچنے اور مالی امداد حاصل کرنے کے لئے، پروپیگنڈا شروع کر رکھا ہے- حکومت ہندوستان کی بھی کوشش ہے کہ وہ اس ملک کے مسلمانوں کے درمیان داعش گروہ کے پروپیگنڈوں اور سائبر اسپیس میں اس کے اثر و رسوخ کی روک تھام کرے- قابل ذکر ہے کہ دنیا میں انڈونیشیا کے بعد سب سے زیادہ مسلمان آبادی ہندوستان میں ہے۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Sunday - 2018 Sep 23