Sunday - 2018 Sep 23
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 83145
Published : 10/9/2015 20:32

مسجد الاقصی کی کلاسیں بند کئے جانے کے خلاف فلسطینی تحریک کا ردعمل

فلسطین کی نیشنل اینیشی ایٹو پارٹی نے مسجدالاقصی میں کلاسیں بند کرانے پر مبنی صیہونی حکومت کے فیصلے کو مسلمانوں کے آزادی عبادت کے حق کی خلاف ورزی قرار دیا ہے۔ فلسطینی خبر رساں ایجنسی سما کی رپورٹ کے مطابق فلسطین کی نیشنل اینیشی ایٹو پارٹی کے سیکریٹری جنرل مصطفی برغوثی نے جمعرات کے دن کہا کہ مسجد الاقصی میں کلاسیں بند کرانے پر مبنی صیہونی وزیر جنگ موشے یعلون کا فیصلہ اس مقدس مکان کی بےحرمتی ہے۔ مصطفی برغوثی نے صیہونی حکومت کے اس فیصلے کو فلسطینی مسلمانوں کے آزادی عبادت کے حق کی خلاف ورزی قرار دیا۔ مصطفی برغوثی نے کہا ہے کہ اس فیصلے کا اصلی مقصد یہ ہے کہ صیہونی آبادکار آزادی کے ساتھ مسجدالاقصی میں داخل ہوں اور ان کو فلسطینیوں کی جانب سے مزاحمت کا سامنا نہ کرنا پڑے۔ فلسطین کی نیشنل اینیشی ایٹو پارٹی کے سیکریٹری جنرل مصطفی برغوثی نے مسجدالاقصی اور بیت المقدس کے خلاف صیہونی حکومت کی جانب سے تیار کی جانے والی سازشوں کے مقابلے پر تاکید کی ہے۔ صیہونی وزیر جنگ موشے یعلون نے اسرائیلی سیکورٹی ایجنسی شاباک اور پولیس کی سفارشات کے بعد بدھ کے دن صیہونی حکومت کے دفاع اور امن عامہ کے تحفظ کے بہانے ایک حکم جاری کرتے ہوئے مسجدالاقصی میں اعتکاف پر بیٹھنے والوں کے داخلے اور اس مسجد میں کلاسوں کی تشکیل پر پابندی لگا دی ہے۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Sunday - 2018 Sep 23