Monday - 2018 Sep 24
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 83155
Published : 10/9/2015 21:27

شام میں روسی فوج کی موجودگی کی تردید

شام کے نائب وزیر خارجہ نے شام میں روسی فوجیوں کی موجودگی سے متعلق افواہوں کی تردید کی ہے- شام کی نیوز ایجنسی سانا کی رپورٹ کے مطابق شام کے نائب وزیر خارجہ فیصل مقداد نے کہا ہے کہ، روس اورشام کے فوجی معاہدے کے تحت صرف دو فوجی مشیر شام میں موجود ہیں اور کوئی بھی روسی فوجی اس ملک میں نہیں ہے- شام کے نائب وزیر خارجہ نے کہا کہ ان افواہوں کو پھیلانے کا مقصد، علاقے اور اس سے باہر امریکہ اور صیہونی حکومت کے مفادات کی خدمت کے لئے دہشت گردی کو مزید بڑھاوا دینا اور علاقے میں امریکی اتحاد کی ناکامیوں پر پردہ ڈالنا ہے- فیصل مقداد نے کہا کہ شام کے سیاسی بحران کےحل اور دہشت گردی سے مقابلے میں طاقت کے توازن کو برقرار رکھنے کے لئے شام کی حکومت کی حمایت میں ماسکو کا موقف، ثابت اور اٹل ہے- شام کے نائب وزیر خارجہ نے روسی وزارت خارجہ کی ترجمان "ماریا زاخارووا" کے کل کے اس بیان کی جانب اشارہ کرتے ہوئے، کہ ماسکو نے ماضی اور حال میں دمشق کی حمایت کی ہے اور کرتا رہے گا، کہا کہ یہ وہی اسٹریٹیجک روش ہے جو شام اور روس کے رابطے اور تعلق کو مستحکم کرتی ہے- روسی وزارت خارجہ کی ترجمان نے بدھ کے روز کہا تھا کہ ان کے ملک نے شام کے ساتھ اپنے فوجی اور تکنیکی تعاون کو ہرگز خفیہ نہیں رکھا ہے اور اس نے اپنا فوجی سازوسامان شامیوں کو فراہم کیا ہے- زاخارووا نے کہا کہ اس وقت روس کے دو فوجی مشیر، روس کے فوجی سازوسامان کے استعمال کی تربیت دینے کے لئے شام میں موجود ہیں-


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2018 Sep 24