يکشنبه - 2019 مارس 24
ہندستان میں نمائندہ ولی فقیہ کا دفتر
Languages
Delicious facebook RSS ارسال به دوستان نسخه چاپی  ذخیره خروجی XML خروجی متنی خروجی PDF
کد خبر : 83578
تاریخ انتشار : 16/9/2015 17:5
تعداد بازدید : 1

روس کے تعاون سے بوشہر میں دو مزید ایٹمی بجلی گھروں کی تعمیر

اسلامی جمہوریہ ایران کے ایٹمی انرجی کے ادارے کے سربراہ نے کہا ہے کہ بوشہر دو اور تین ایٹمی بجلی گھروں کی تعمیر کا پراجیکٹ، روس کے تعاون سے شروع کیا جائے گا-
ایران کے ایٹمی انرجی کے ادارے کے سربراہ علی اکبر صالحی نے ویانا میں ایٹمی انرجی کی عالمی ایجنسی کے اجلاس کے موقع پر روس ایٹم کمپنی کے سربراہ سرگئی کرینکو سے ملاقات کے بعد کہا کہ اس ملاقات میں جامع مشترکہ ایکشن پلان کے تناظر میں روس کی ذمہ داریوں کے بارے میں گفتگو ہوئی- علی اکبر صالحی نے ہمارے نمائندے سے گفتگو کرتے ہوئے ایران اور روس کے خصوصی تعلقات کی جانب اشارہ کیا اور کہا کہ روس کی جانب سے ایران کے موقف کی حمایت اور جامع مشترکہ ایکشن پلان کو حتمی نتیجے تک پہنچانے میں گروپ پانچ جمع ایک کے رکن کی حیثیت سے روس کی تجاویز بہت تعمیری تھیں- انھوں نے کہا کہ ایران اور روس کے درمیان بوشہر میں دو مزید ایٹمی بجلی گھروں کی تعمیر کے لئے معاہدہ ہوا ہے، کہ جس کے لئے مالی امور کی ذمہ داری روس نے قبول کی ہے- ایران کے ایٹمی انرجی کے ادارے کے سربراہ نے بوشہر ایٹمی بجلی گھر کا پراجیکٹ مکمل کر کے ایران کے حوالے کئے جانے پر تاکید کرتے ہوئے کہا کہ بوشہر ایٹمی بجلی گھر اچھی طرح کام کر رہا ہے اور اب ہم اس مرحلے پر پہنچ گئے ہیں کہ ایرانی ماہرین ، اس بجلی گھر اور اس کو چلانے کی پوری ذمہ داری سنبھال سکتے ہیں-


نظر شما



نمایش غیر عمومی
تصویر امنیتی :