يکشنبه - 2019 مارس 24
ہندستان میں نمائندہ ولی فقیہ کا دفتر
Languages
Delicious facebook RSS ارسال به دوستان نسخه چاپی  ذخیره خروجی XML خروجی متنی خروجی PDF
کد خبر : 83630
تاریخ انتشار : 18/9/2015 11:42
تعداد بازدید : 5

برکینا فاسو میں ایوان صدر کے قریب فائرنگ

افریقی ملک برکینا فاسو میں ایوان صدر کے قریب فائرنگ ہوئی کہ جہاں اس ملک کے صدر اور وزیر اعظم کو صدارتی محافظوں نے یرغمال بنا رکھا ہے۔
موصولہ رپورٹوں کے مطابق برکینا فاسو میں بدھ کی رات سے صدارتی محافظوں نے صدر میشل کفانڈو، وزیراعظم ایساک زیدا اور کابینہ کے دیگر وزرا کو یرغمال بنا رکھا ہے۔
ایسے میں کہ جب صدارتی گارڈز کے بارے میں نئے بل کی منظوری سے متعلق کابینہ کا اجلاس جاری تھا اسی وقت مسلح صدارتی گارڈز نے صدر اور وزیر اعظم کو یرغمال بنا لیا- 
واضح رہے کہ برکینا فاسو کے قومی آشتی کمیشن نے پیر کے روز صدارتی سیکورٹی گارڈز کو تحلیل کرنے کا اعلان کیا تھا اور یہی امر ان کی ناراضگی کا سبب بنا ہے۔ 
اس سے قبل بھی صدارتی گارڈز نے گذشتہ سال فروری اور دسمبر میں شورش کرکے اس وقت کے وزیر اعظم کو یرغمال بنا لیا تھا۔
دوسری جانب اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل بان کی مون نے برکینا فاسو کی صورتحال پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے اپیل کی ہے کہ صدر،وزیراعظم اور کابینہ کے ارکان کو فوری طور پر رہا کیا جائے۔


نظر شما



نمایش غیر عمومی
تصویر امنیتی :