يکشنبه - 2019 مارس 24
ہندستان میں نمائندہ ولی فقیہ کا دفتر
Languages
Delicious facebook RSS ارسال به دوستان نسخه چاپی  ذخیره خروجی XML خروجی متنی خروجی PDF
کد خبر : 83699
تاریخ انتشار : 19/9/2015 13:57
تعداد بازدید : 1

داعش کا مقابلہ کرنے کے لیے امریکی فوجیوں کی خدمات لینے سے عراق کا انکار

عراق کے وزیر دفاع نے دہشت گرد گروہ داعش کا مقابلہ کرنے کے لیے امریکی فوجیوں کی خدمات حاصل کرنے سے انکار کر دیا ہے-
موصولہ رپورٹ کے مطابق عراق کے وزیر دفاع خالد العبیدی نے داعش کے خلاف کارروائیوں میں امریکی فوجیوں کی کسی بھی قسم کی شرکت کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ عراق کے مختلف علاقوں کو داعش کے وجود سے پاک کرنے کے لیے فوج اور عوامی رضاکار فورس کی کارروائیاں بدستور جاری ہیں- انھوں نے مزید کہا کہ عراقی فوج اور عوامی رضاکار فورس نے شمالی صوبے صلاح الدین کے قریب بیجی شہر میں کافی پیش قدمی کی ہے اور عنقریب داعش کے قبضے سے اس شہر کی آزادی کی خبر کا اعلان کر دیا جائے گا- اسی سلسلے میں عراقی فوج کے مشترکہ آپریشن کی کمان کے ترجمان یحیی رسول نے کہا ہے کہ عراقی فوج اور عوامی رضاکار فورس داعش کے خلاف جنگ میں امریکی فوجیوں کو شامل ہونے کی ہرگز اجازت نہیں دے گی- واضح رہے کہ امریکہ کے نائب صدر جو بائیڈن نے کچھ عرصہ قبل عراق کو تین حصوں میں تقسیم کرنے کا منصوبہ پیش کیا تھا اور عراقی حکام کا خیال ہے کہ دہشت گرد گروہ داعش کا مقابلہ کرنے کے بہانے امریکی فوجیوں کو عراق بھیجنا عراق میں اس امریکی منصوبے پر عملدرآمد کرنے کی ایک کوشش ہے-


نظر شما



نمایش غیر عمومی
تصویر امنیتی :