Tuesday - 2018 Oct. 23
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 83935
Published : 23/9/2015 9:1

چینی صدر نے سائبر حملے کے بارے میں امریکا کے دعووں کو مسترد کردیا

چین کے صدر شی جن پنگ نے حکومت چین کی طرف سے امریکی کمپنیوں پر سائبر حملے کی اجازت کے امریکی دعووں کی تردید کی ہے- اطلاعات کے مطابق چین کے صدر شی جن پنگ نے حکومت چین کی طرف سے خفیہ تجارتی معلومات کی چوری کی غرض سے امریکی کمپنیوں پر سائبر حملے کی اجازت کے امریکی دعووں کی تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ خفیہ تجارتی معلومات کی کسی بھی طرح کی چوری میں حکومت چین ملوث نہیں ہے-
امریکا کی قومی سلامتی کی مشیر سوزان رائس نے پیر کے روز چین کو اقصادی جاسوسی کے بارے میں خبردار کرتے ہوئے اسے جارحانہ اقدام قرار دیا تھا-
چینی صدر نے روزنامہ وال اسٹریٹ جرنل میں منگل کو شائع ہونے والے ایک بیان میں کہا ہے کہ خفیہ تجارتی معلومات کی کسی بھی طرح کی چوری میں حکومت چین ملوث نہیں ہے-
انہوں کہا ہے کہ حکومت چین نہ تو جاسوسی کرتی ہے اور نہ ہی ان چینی کمپنیوں کی حمایت کرتی ہے جو اس طرح کی سرگرمیوں میں ملوث ہیں-
شی جن پنگ نے کہا کہ ان کا ملک سائبر سیکورٹی کی حمایت کو بہت سنجیدہ سمجھتا ہے اور یہ کہ خود چین بھی سائبر حملوں کا نشانہ بن چکا ہے- انہوں نے کہا کہ اس طرح کے اقدامات سنگین جرائم میں شمار ہوتے ہیں اور ان میں ملوث افراد کو قانون کے مطابق سزا ملنی چاہئے-
چینی صدر نے کہا کہ چین اور امریکا کو سائبر سیکورٹی کے بارے میں مشترکہ طور پر تشویش لاحق ہے اور اس سلسلے میں دونوں ممالک اپنے تعاون میں اضافہ کریں گے- چینی صدر شی جن پنگ منگل سے اپنا دورہ امریکا شروع کر رہے ہیں اور امریکی صدر باراک اوباما جمعہ کو ان کی میزبانی کریں گے- 


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Tuesday - 2018 Oct. 23