Tuesday - 2018 Oct. 23
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 83951
Published : 23/9/2015 9:52

دہشت گردی کے خلاف جنگ کے لیے شام کے ساتھ تعاون کی ضرورت

اقوام متحدہ میں شام کے مستقل نمائندے نے اپنے ملک کے تعاون کے بغیر دہشت گردی کے خلاف جنگ کو ناممکن قرار دیا ہے. شامی نیوز ایجنسی سانا کی رپورٹ کے مطابق اقوام متحدہ میں شام کے مستقل نمائندے بشار الجعفری نے پیر کی شام اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے سربراہ اور سیکرٹری جنرل کے نام دو الگ الگ خطوط میں کہا ہے کہ داعش اور جبھۃ النصرہ سمیت شام میں سرگرم دہشت گرد گروہوں کو کچلنا اور ان کو ختم کرنا شامی حکومت کی مکمل ہم آہنگی اور تعاون کے بغیر ممکن نہیں ہے- 
انھوں نے کہا کہ دہشت گرد گروہ داعش کا مقابلہ کے بہانے شام میں اپنی مداخلت کا جواز پیش کرنے کے لیے امریکہ، برطانیہ، فرانس، کینیڈا اور آسٹریلیا کی کوششیں اقوام متحدہ کے منشور کے منافی ہیں۔
بشار جعفری نے کہا کہ اقوام متحدہ کے منشور کے آرٹیکل اکاون کے مطابق شامی حکومت کی ہم آہنگی کے بغیر مذکورہ ملکوں کا کوئی بھی اقدام بین الاقوامی قوانین اور شام کے اقتدار اعلی کی خلاف ورزی ہے- 
بشار الجعفری نے مزید کہا کہ دہشت گردی کا مقابلہ کرنے کے لیے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراردادوں کے باوجود سعودی عرب، ترکی اور قطر سمیت اقوام متحدہ کے بعض رکن ممالک اپنے تمام تر وسائل و امکانات سے دہشت گردوں کی مالی اور فوجی مدد کر رہے ہیں-


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Tuesday - 2018 Oct. 23