Monday - 2018 Dec 10
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 84413
Published : 2/10/2015 19:52

یمن پر سعودی حکومت کی وحشیانہ بمباری، 100 سے زائد شہید

یمن پر سعودی حکومت کے تازہ وحشیانہ حملوں میں سو سے زائد عام شہری شہید ہوگئے ہیں۔ یمن کے المسیرہ ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق جمعرات کی شام صوبہ صعدہ میں آل مقنع نامی بازار پر سعودی جنگی طیاروں کی بمباری میں کم سے کم نوے عام شہری شہید ہوگئے۔ 

سعودی جنگی طیاروں نے اسی طرح صوبہ ذمار کے علاقے المنار پر چار بار بمباری کی جس میں متعدد یمنی شہری شہید اور زخمی ہوگئے۔ 
یمن کے دارالحکومت صنعا کے علاقے حدہ میں ایک ریفائنری پر سعودی عرب اور اس کے اتحادیوں کے ہوائی حملے میں بھی دو عام شہری شہید اور دس زخمی ہوگئے ہیں۔
دوسری جانب یمنی افواج نے باب المندب میں سعودی اتحاد کے ایک حملے کو ناکام بنادیا ہے۔ باب المندب میں ہونے والی لڑائی میں یمنی فوج اور عوامی رضاکار فورس کے سپاہیوں نے سعودی حکومت کا ایک اپاچی جنگی ہیلی کاپٹر اور دو جاسوس طیارے مارے گرائے ہیں 
یمنی فوج اور عوامی رضاکار فورس کے جوانوں نے اسی طرح باب المندب سے متصل الصبیحہ نامی علاقے میں سعودی عرب کے سات ٹینکوں کو تباہ کردیا ہے۔
یمن کی فوج اور عوامی رضاکار فورس کی مسشترکہ ہائی کمان نے اعلان کیا ہے کہ باب المندب میں زمینی ، فضائی اور سمندری حملے میں صیہونی حکومت نے براہ راست شرکت کی ہے ۔ صوبۂ مآرب میں جارح سعودی عرب کے فوجی ٹھکانوں پر یمنی فوج اور عوامی رضا کارفورس کے حملوں میں پچپن سعودی فوجی ہلاک اور زخمی ہوگئے ہیں۔
رپورٹ کے مطابق صوبۂ مآرب کے بعض علاقوں میں ہونے والے ان حملوں میں سعودی فوج کی پندرہ بکتر بند گاڑیاں بھی تباہ ہوگئیں۔
ادھر یمنی فوج نے سعودی عرب کے جنوبی علاقے جیزان میں الردیف نامی سعودی فوجی اڈے پر مارٹر گولے داغ کر کئی سعودی فوجیوں کو موت کے گھاٹ اتار دیا۔ ایک اور رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ یمن اور سعودی عرب کی سرحد پر دونوں ملکوں کی افواج کے درمیان گولہ باری اور لڑائی کا سلسلہ آخری اطلاع ملنے تک جاری تھا۔ 


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2018 Dec 10