Sunday - 2018 Nov 18
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 84420
Published : 2/10/2015 20:13

مارک سیگل کے بیان پر پاکستان کے سابق صدر کا ردعمل

پاکستان کے سابق فوجی صدر پرویز مشرف نے بے نظیر بھٹو قتل کیس کے گواہ کے بیان کو مسترد کردیا ہے۔ میڈیا رپورٹوں کے مطابق پاکستان کے سابق صدر پرویز مشرف نے امریکی صحافی مارک سیگل کے بیان کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ محترمہ بے نظیر بھٹو کے ساتھ ان کا امریکہ میں کوئی ٹیلی فونک رابطہ نہیں تھا اور نہ ہی انہوں نے دوہزار سات میں بے نظیر بھٹو سے فون پر بات کی ہے۔ 

گزشتہ روز امریکی صحافی اور بے نظیر بھٹو کیس کے اہم گواہ مارک سیگل نے ویڈیو لنک کے ذریعے انسداد دہشت گردی کی ایک عدالت کے سامنے اپنا بیان ریکارڈ کروایا تھا۔ امریکی صحافی نے دعوی کیا تھا کہ سابق صدر پرویز مشرف نے فون کر کے بینظیر بھٹو سے کہا تھا کہ ان کی جان کو خطرہ ہے اور ان کی سلامتی کا انحصار بہتر تعلقات سے مشروط ہے۔ 
پرویز مشرف نے مارک سیگل کے بیان کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ مخالفین امریکی صحافی کے بیان کو پاکستان کے خلاف استعمال کرنا چاہتے ہیں۔
خیال رہے کہ بے نظیر بھٹو ، ستائیس دسمبر دوہزار سات میں اس وقت فائرنگ اور بم دھماکے میں ہلاک ہوگئی تھیں جب وہ اپنی پارٹی کی انتخابی مہم کے سلسلہ میں راولپنڈی کے لیاقت باغ میں جلسہ عام سے خطاب کرنے کے بعد واپس جارہی تھیں۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Sunday - 2018 Nov 18