Wed - 2018 Nov 21
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 84477
Published : 3/10/2015 18:15

سعودی طیاروں نے یمن پر فاسفورس بم گرانا شروع کردیئے

سعودی حکومت نے اپنی درندگی کا سلسلہ جاری رکھتے ہوئے یمن پر فاسفورس بم گرائے ہیں۔ یمن کی سرکاری خبررساں ایجنسی سبا کے مطابق سعودی جنگی طیاروں نے شہر مارب کے مغرب میں واقع ایک پہاڑی علاقے البلاق پر فاسفورس بم گرائے ہیں۔

 سعودی حکومت کے جنگی طیارے اس سے پہلے بھی یمن پر فارسفورس اور کلسٹر بم سمیت مختلف قسم کے ممنوعہ بم گراچکے ہیں۔ سعودی جنگی طیاروں نے سنیچر کو یمن کے تبۃ المصاریہ، ایدات الراء ، اور الجفینہ نامی علاقوں پر بھی بمباری کی ہے۔ صرواح میں بھی رہائشی علاقوں پر سعودی جنگی طیاروں کے حملوں کی رپورٹ ہے۔ سعودی جنگی طیاروں نےیمن کے شہر البدایا میں ایک اسٹیڈیم پر بھی بمباری کی ہے ۔ 
دوسری طرف باب المندب میں سعودی فوجیوں سے یمنی افوج کی لڑائی کی خبر ہے۔ یمن کی فوج اور عوامی رضاکار فورس کی مسشترکہ ہائی کمان نے اعلان کیا ہے کہ باب المندب میں زمینی ، فضائی اور سمندری حملے میں صیہونی حکومت نے براہ راست شرکت کی ہے ۔
دوسری جانب یمنی افواج نے ایک سرحدی سعودی علاقے الجابری پر مکمل طور پر کنٹرول حاصل کرلیا ہے۔ رپورٹوں میں بتایا گیا ہے کہ یمنی فوج اور عوامی رضاکار کے جوانوں کےپہنچتے ہی سعودی فوجیوں نے راہ فراہ اختیار کی اور الجابری کا علاقہ مکمل طور پر یمنی افواج کے کنٹرول میں آگیا۔
اسی کے ساتھ یمن کی فوج اور عوامی رضاکار فورس کے جوانوں نے سعودی عرب کے علاقے الطوال میں المسفق نامی فوجی کیمپ پر بھی حملہ کیا ہے ۔ اس حملے میں بہت سے سعودی فوجیوں کے مارے جانے کی خبر ہے۔ 
یہ ایسی حالت میں ہے کہ جمعے کو صوبۂ مآرب میں جارح سعودی عرب کے فوجی ٹھکانوں پر یمنی فوج اور عوامی رضا کارفورس کے حملوں میں پچپن سعودی فوجی ہلاک اور زخمی ہوگئے تھے ۔ رپورٹ کے مطابق صوبۂ مآرب کے بعض علاقوں میں ہونے والے ان حملوں میں سعودی فوج کی پندرہ بکتر بند گاڑیاں بھی تباہ ہوگئیں۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Wed - 2018 Nov 21