Thursday - 2018 Dec 13
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 84570
Published : 5/10/2015 7:22

بحرین، متحدہ عرب امارات اور کینیڈا کے بے بنیاد الزامات کا دو ٹوک جواب

اسلامی جمہوریہ ایران نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اجلاس میں بحرین، متحدہ عرب امارات اور کینیڈا کے بے بنیاد الزامات کا بھررپور جواب دیا ہے اقوام متحدہ میں ایران کے مستقل مندوب غلام علی خوشرو نے جنرل اسمبلی کے اجلاس میں بحرینی وزیرخارجہ کے اس الزام کو سختی سے مستردکردیا کہ ایران، بحرین کے داخلی معاملات میں مداخلت کررہا ہے - 
ایرانی مندوب نے کہاکہ بحرینی حکام کی طرف سے ایران کے خلاف اس قسم کے الزامات بحرین میں ایک اقلیتی گروہ کے ذریعے اکثریتی شہریوں کے بنیادی حقوق کی پامالی پردہ ڈالنے کی کوشش ہیں - اقوام متحدہ میں ایران کے مند وب نے سانحہ منی کے تعلق سے ایرانی حکام کے موقف کے بارے میں متحدہ عرب امارات اور بحرین کےوزرائے خارجہ کے بیانات کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ بحرینی اور اماراتی حکام کے ذریعے ایسے معاملے میں جو ان سے مربوط نہیں ہے اس قسم کے اشتغال انگیزبیانات سے مسئلے کے حل میں کوئی مدد نہیں ملے گی - 
ایرانی مندوب نے خلیج فارس کا نام تحریف کرنے اور تینوں ایرانی جزیروں کے بارے میں بحرین اور متحدہ عرب امارات کے وزرائےخارجہ کے تکراری بیانات کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ اقوام متحدہ کے اجلاس میں سیاسی مقاصد کے تحت جغرافیائی ناموں کی تحریف کو پہلے ہی مسترد کیا جاچکا ہے اور یہ افسوس کا مقام ہے کہ خلیج فارس کا نام تبدیل کرنے کی آڑ میں بعض سیاسی مقاصد کے تحت کچھ عرب ملکوں کے حکام اس سمندر کا نام تحریف کرنےکی غرض سے تکراری اور گھسے پٹے حربے استعمال کررہےہیں -
 اقوام متحدہ میں ایران کے مندوب نے کینیڈا کے نائب وزیرخارجہ کے بیان کے جواب میں بھی کہا کہ کینیڈا کے نمائندے کا ایران مخالف بیان صرف اس لئے ہے کہ ایٹمی معاہدے کے بعد کینیڈا کی قدامت پسند حکومت کے پاس اب ایرانوفوبیا پھیلانے کا کوئی بہانہ نہیں بچا ہے اوروہ ایران مخالف پروپیگنڈوں کا ماحول اپنے ہاتھ سے نکلتا دیکھ کر پریشان ہے -
 ایرانی مند وب نے کہا کہ یہ حیرت کی بات ہے کہ کینیڈا کی حکومت جس کا انسانی حقوق سے متعلق ریکارڈ کینیڈا کے مقامی باشندوں سیاہ فاموں اور پناہ گزینوں کے تعلق سے پہلے ہی بہت زیادہ خراب ہے اور وہ غاصب صیہونی حکومت کی بھی غیرمشروط حمایت کررہی ہے خود کو انسانی حقوق کی مدافع اور طرفدارسمجھتی ہے -


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Thursday - 2018 Dec 13