دوشنبه - 2019 مارس 25
ہندستان میں نمائندہ ولی فقیہ کا دفتر
Languages
Delicious facebook RSS ارسال به دوستان نسخه چاپی  ذخیره خروجی XML خروجی متنی خروجی PDF
کد خبر : 84635
تاریخ انتشار : 5/10/2015 18:8
تعداد بازدید : 2

پنجاب پاکستان میں دہشت گردوں اور فرقہ وارانہ تنظیموں کے خلاف کاروائیاں

پاکستانی حکومت نے نیشنل ایکشن پلان کے تحت جنوبی پنجاب میں دہشت گرد اور فرقہ پرست تنظیموں کے خلاف وسیع پیمانے پر کاروائیاں شروع کردی ہیں-
اخبار ایکسپریس ٹریبیون نے ایک اعلی حکومتی عہدیدار کے حوالے سے لکھا ہے کہ جنوبی پنجاب میں اس آپریشن کا دائرہ پھیلانے  اور اسے مزید موثر بنانے کا فیصلہ گزشتہ مہینے ہونے والے اعلی ترین سول و فوجی عہدیداروں  کے اجلاس میں کیا گیا۔ اپنی شناخت ظاہر نہ کرنے کی شرط پر اس عہدیدار نے آپریشن کی تفصیلات یہ کہہ کر نہیں بتائیں کہ اس سے حکومتی منصوبے کو نقصان پہنچ سکتا ہے۔جنوبی پنجاب میں فرقہ پرست تنظیموں کے خلاف آپریشن کا فیصلہ ان انٹیلی جنس رپورٹوں کے بعد کیا گیا ہے جن میں وارننگ دی گئی تھی کہ یہ علاقہ داعش جیسے گروہوں کی طاقتور نرسری بن سکتا ہے-
اس سینیئر حکومتی عہدیدار نے کہا کہ سیکورٹی ایجنسیوں نے حال ہی میں درجنوں ایسے مشتبہ افراد کو حراست میں لیا ہے جو ممکنہ طور پر داعش کیلیے نوجوانوں کو بھرتی کر رہے تھے۔ پاکستان اگرچہ اپنی سر زمین پر داعش کی موجودگی سے انکار کرتا ہے تاہم وہ یہ بھی تسلیم کرتا ہے کہ دہشت گرد گروپوں کے خطرے اور دھمکیوں سے غافل نہیں رہا جا سکتا ۔ فرقہ پرست تکفیری نظریات کی حامل  تنظیموں کے خلاف یہ آپریشن پاکستان کی پالیسی میں بڑی تبدیلی ہے کیونکہ ماضی میں ان کے خلاف کارروائی سے احترازکیا جاتا رہا ہے-


نظر شما



نمایش غیر عمومی
تصویر امنیتی :