يکشنبه - 2019 مارس 24
ہندستان میں نمائندہ ولی فقیہ کا دفتر
Languages
Delicious facebook RSS ارسال به دوستان نسخه چاپی  ذخیره خروجی XML خروجی متنی خروجی PDF
کد خبر : 86665
تاریخ انتشار : 5/11/2015 16:36
تعداد بازدید : 2

ترکی کے بنیادی آئین میں تبدیلی کی خواہش کا اظہار

ترکی کے صدر نے اعلان کیا ہے کہ ترک عوام نے یکم نومبر کے پارلیمانی انتخابات میں اپنے ملک کے بنیادی آئین میں تبدیلی کے حق میں ووٹ دیئے ہیں۔

فارس نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق ترکی کے صدر رجب طیب اردوغان نے ایک بیان میں ترکی کا بنیادی آئین تبدیل کئے جانے کی ضرورت کی طرف اشارہ کرتے ہوئے حزب اختلاف کی تمام جماعتوں سے ترکی کی ترقی کی غرض سے نئے بنیادی آئین کی تدوین میں شراکت کی اپیل کی ہے۔

ترکی کے صدر نے تمام ترک اقوام میں اتحاد کی ضرورت پر بھی زور دیا۔ رجب طیب اردوغان نے اپنے ملک کے جنوبی اور جنوب مشرقی علاقوں میں پی کے کے، کے خلاف ترک سیکورٹی فورسز کی کارروائیوں میں تیزی آنے کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ ترکی میں مکمل امن و استحکام کی برقراری تک سیکورٹی فورسز کی کارروائیاں بدستور جاری رہیں گی۔

واضح رہے کہ ترکی کی حکمران ترقی و انصاف پارٹی نے حالیہ پارلیمانی انتخابات میں پانچ سو پچاس نشستوں میں سے تین سو پندرہ نشستیں حاصل کی ہیں جبکہ آئین میں تبدیلی کے لئے اسے پارلیمنٹ کے تین سو سڑسٹھ اراکین کی حمایت کی ضرورت ہو گی۔ قابل ذکر ہے کہ ترکی کی حکمران جماعت، آئین میں تبدیلی کے ذریعے اپنے ملک کے صدر کے اختیارات میں اضافہ کئے جانے کی خواہاں ہے۔


نظر شما



نمایش غیر عمومی
تصویر امنیتی :