چهارشنبه - 2019 مارس 20
ہندستان میں نمائندہ ولی فقیہ کا دفتر
Languages
Delicious facebook RSS ارسال به دوستان نسخه چاپی  ذخیره خروجی XML خروجی متنی خروجی PDF
کد خبر : 86684
تاریخ انتشار : 6/11/2015 18:39
تعداد بازدید : 8

بحرین کے عوام کی جانب سےانتفاضہ قدس کی حمایت پر آل خلیفہ کا ردعمل

بحرین کی آل خلیفہ حکومت نے انتفاضہ قدس کی حمایت میں ہونے والے مظاہرے پر پابندی لگا دی ہے۔
اطلاعات کے مطابق آل خلیفہ کے سیکورٹی عہدیداروں نے اعلان کیا ہے کہ بحرینی شہریوں کو انتفاضہ قدس کی حمایت میں مظاہرے کرنے کی اجازت نہیں ہے۔ بحرین کے سیکورٹی عہدیداروں نے جمعرات کو اعلان کیا کہ بحرینی شہریوں کو جمعہ کو دارالحکومت منامہ میں اقوام متحدہ کے دفتر کے سامنے ہونے والے کسی بھی طرح کے اجتماع کی اجازت نہیں ہے۔ 

ادھر بحرین کی مختلف سیاسی پارٹیوں نے ایک بیان جاری کرکے آل خلیفہ حکومت کے مذکورہ فیصلے پر حیرت کا اظہار کرتے ہوئے اعلان کیا ہے کہ یہ اقدام بحرین میں آزادی اظہار کی کم سے کم آزادی نہ ہونے کا ثبوت ہے۔ اس سے پہلے بحرینی حکام نے پورے ملک میں عاشورائے محرم کے موقع پر نکالے جانے والے ماتمی جلوسوں پر حملہ کیا تھا اور ماہ محرم سے متعلق عزاداری کے پرچموں اور بینروں کو پھاڑ دیا تھا۔ 
بحرین میں دوہزار گیارہ میں عوامی قیام کو سرکوب کئے جانے کے بعد سے اب تک عوامی احتجاج کا سلسلہ جاری ہے۔ بحرینی عوام اپنے ملک میں سیاسی اصلاحات کا مطالبہ کر رہے ہیں۔ آل خلیفہ کی ڈکٹیٹر حکومت سعودی عرب اور بعض دیگر عرب حکومتوں کے فوجیوں اور ایجنٹوں کی مدد سے عوامی احتجاج کو سرکوب کر رہی ہے۔


نظر شما



نمایش غیر عمومی
تصویر امنیتی :