Tuesday - 2018 Dec 11
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 88232
Published : 27/11/2015 17:58

ایران کی وزارت خارجہ کی ایک بار پھر سانحہ منی کے حوالے سےسعودی انتظامیہ کے رویئے پر سخت تنقید

ایران کی وزارت خارجہ نے ایک بار پھر سانحہ منی کے حوالے سےسعودی انتظامیہ کے رویئے پر کڑی نکتہ چینی کی ہے۔ ایران کی وزارت خارجہ کے ترجمان صادق حسین جابری انصاری نے ، سانحہ منی میں شہید ہونے والے ایران کے سابق انقلابی سفارتکار غضنفر رکن آبادی کے جلوس جنازہ کے موقع پر صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ سعودی عرب نے سانحہ منی کے حوالے سے انتہائی لاپرواہی کا مظاہرہ کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سعودی عرب کی بداتنظامی اور عدم تعاون کی وجہ سے شہید رکن آبادی اور دیگر شہدائے منی کی سرنوشت کا پتہ لگانے میں دشواریوں کا سامنا کرنا پڑا ۔ جابری انصاری نے کہا کہ حج کے میزبان ملک کی حثیت سے سانحہ منی کی سیاسی ، انسانی اور قانونی ذمہ داریاں سعودی عرب پر عائد ہوتی ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ لاپتہ افراد کی سرنوشت کا پتہ لگانا ہماری اولین ترجیح ہے جس کے بعد اس سانحہ کے حوالے سے قانونی اور سیاسی معاملات کو آگے بڑھایا جائے گا- قابل ذکر ہے کہ سانحہ منی میں شہید ہونے والے ایران کے سابق انقلابی سفارت کار غضنفررکن آبادی کی میت جمعے کے روز جدہ سے تہران منتقل کی گئی ہے۔ رواں سال حج کے موقع پر سعودی انتطامیہ کی لاپرواہی کے نتیجے میں پیش آنے والے سانحے میں چار سو ساٹھ سے زیادہ ایرانیوں سمیت ہزاروں حجاج کرام شہید ہوگئے تھے۔ متعدد ایرانی زائرین اب بھی لاپتہ ہیں اور ان کی لاشوں کی شناخت کا کام جاری ہے۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Tuesday - 2018 Dec 11