Monday - 2018 Dec 17
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 88887
Published : 7/12/2015 19:15

یمن کے صوبہ عدن کے گورنر ایک دھماکے میں مارے گئے

یمن کے صوبہ عدن کے گورنر ایک دھماکے میں مارےگئے ہیں۔ دوسری جانب مراکش نے بھی اپنے فوجی سعودی عرب کا ساتھ دینے کے لئے یمن بھیج دیئے ہیں -

فارس خبر رساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق یمن کے صوبہ عدن کے گورنر جعفر سعد صوبے کے وسطی علاقے التواہی میں ان کے قافلے کے راستے میں ہونے والے دھماکے میں مارے گئے ہیں۔ رپورٹ کے مطابق اس دھماکے میں ان کے بعض ساتھی بھی مارے گئے ہیں۔ ادھر یمنی فوج اور عوامی رضاکار فورس کے جوانوں نے دارالحکومت صنعا میں ایک اسکول کے پاس کھڑی کار میں نصب ایک بم کو ناکارہ بنا دیا ہے۔

یمنی فوج اور رضاکار فورس نے یمن کے وسطی صوبے مآرب کے مختلف علاقوں میں ہونے والی لڑائی میں کم سے کم چار دہشت گردوں کوہلاک کردیا ہے۔ المسیرہ ٹی وی نے بھی رپورٹ دی ہے کہ گزشتہ چوبیس گھنٹے کے دوران سعودی لڑاکا طیاروں نے صوبہ مآرب پر ساٹھ بار حملہ کیا ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ سعودی آپاچی ہیلی کاپٹروں اور ڈرون طیاروں نے بھی اس صوبے کے مختلف علاقوں کو بارہا اپنے حملوں کا نشانہ بنایاہے۔

اس درمیان خبر ہے کہ مراکش نے اپنی اسپیشل فورس کے پندرہ سو فوجیوں کو یمن کی جنگ میں سعودی عرب کا ساتھ دینے کے لئے یمن روانہ کردیا ہے - یمن آن لائن نے خبردی ہے کہ مراکش کے ان فوجیوں کو پہلے امریکی فوجیوں نے بطنطا کے علاقے میں خصوصی ٹریننگ دی اس کے بعدانہیں یمن روانہ کیا گیا- مراکش یمن پر ہوائی حملوں میں سعودی عرب کا ساتھ دے رہاہے لیکن اس نے اپنی بری فوج ابھی تک یمن نہیں بھیجی تھی- اس سے پہلے دوماہ قبل سوڈان نے اپنے چھے ہزار فوجی سعودی عرب کی حمایت میں یمن کے جنوبی شہرعدن روانہ کئے تھے - 

واضح رہے کہ متحدہ عرب امارات ، بحرین ، قطر اور کولمبیا ان ملکوں میں شامل ہیں جنھوں نے یمن کی جنگ میں سعود ی عرب کا ساتھ دینے کے لئے اپنے فوجی بھیجے ہیں - اس وقت سعودی عرب کی سرپرستی میں ایک لاکھ پچاس ہزار فوجی یمن کے عوام کے خلاف جنگ کررہے ہیں - اس درمیان یمنی فوج اور عوامی رضاکارفورس کے جوابی حملوں میں متحدہ عرب امارات اور سعودی عرب کے دسیوں فوجی ہلاک ہوچکے ہیں جبکہ بعض ذرائع کا کہناہے کہ سعودی عرب کے سیکڑوں فوجی اس جنگ میں مارے جاچکے ہیں


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2018 Dec 17