Tuesday - 2018 Dec 11
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 89089
Published : 10/12/2015 16:37

امریکی حملے دہشتگردوں کے استحکام کا باعث

شام میں امریکی فوجی کاروائیوں سے دہشتگردوں کو تقویت ملی ہے۔

صیہونی تکفیری دہشتگرد گروہ داعش نے دیرالزور میں شام کی فوج کے ٹھکانوں پر امریکی طیاروں کی بمباری کے بعد اپنے مورچے مستحکم کرلئے ہیں۔ دیرالزور شام کا مشرقی صوبہ ہے۔ العالم کی رپورٹ کے مطابق شام کی وزارت خارجہ نے کہا ہے کہ صوبہ دیرالزور میں شام کے فوجی ٹھکانے پر امریکی طیاروں کی بمباری کے بعد تکفیری دہشتگرد گروہ داعش نے اس صوبے میں اپنی پوزیشن مستحکم بنالی ہے۔

سیاسی ماہرین کا کہنا ہے کہ امریکہ نے پہلے سے تیار شدہ منصوبے کے تحت شامی فوج کے ٹھکانوں پر بمباری کی تھی۔ دیرالزور صوبے میں فوجی ذرائع نے روس کے لائف نیوز چینل سے گفتگو میں کہا کہ شام کے فوجی ٹھکانوں پر امریکی طیاروں کی بمباری کے بعد داعش نے فوری طور پر اس صوبے کے جنوبی مغربی علاقوں پر بھاری گولہ باری شروع کردی تھی۔ اس فوجی ذریعے نے بتایا کہ کم از کم چار جنگی طیاروں نے شام کے فوجی اڈے پرحملے کئے تھے۔ شام کی وزارت خارجہ نے اقوام متحدہ سے کہا ہے کہ شامی فوج کے ٹھکانوں پر امریکی حملوں پر رد عمل دکھائے۔

واضح رہے داعش دہشتگرد گروہ کو امریکہ، سعودی عرب، ترکی اور صیہونی حکومت کی بھرپور حمایت حاصل ہے۔ شام کی وزارت خارجہ نے پیر کو ایک بیان جاری کرکے کہا تھا کہ شام کے فوجی ٹھکانوں پر حملے دہشتگردی کے مقابلے میں رکاوٹیں کھڑی کرنا ہے اور اس سے ایک بار پھر ظاہر ہوجاتا ہے کہ امریکہ اور اس کے اتحادی دہشتگردی سے مقابلے میں سنجیدہ اور سچے نہیں ہیں۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Tuesday - 2018 Dec 11