Monday - 2018 Sep 24
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 89504
Published : 17/12/2015 18:28

برطانیہ نے سعودی عرب کو ہتھیار فروخت کر کے جنگ یمن کو ہوا دی : ایمنسٹی انٹرنیشنل

ایمنسٹی انٹرنیشنل نے کہا ہے کہ برطانیہ نے سعودی عرب کو ہتھیار فروخت کر کے جنگ یمن کو ہوا دی ہے - جمعرات کے دن منظر عام پر آنے والی رپورٹ کے مطابق برطانوی حکومت نے کئی مہینوں تک سعودی عرب کے فوجیوں کو ہتھیار فراہم کئے جن سے سعودی عرب نے جنگ یمن میں غیر فوجی اہداف کو نشانہ بنایا مثلا سعودی عرب نے برطانیہ کی مارکونی کمپنی کے تیار کردہ ایک کروز میزائل کے ساتھ یمن کے دارالحکومت صنعا کے مغرب میں واقع ایک فیکٹری کو منہدم کر دیا۔ اس حملے میں ایک عام شہری شہید ہوا۔ اس رپورٹ کے مطابق یمن میں ہسپتالوں، اسکولوں، بازاروں ، غلے کے گوداموں اور پناہ گزینوں کے کیپموں سمیت غیر فوجی اہداف کو نشانہ بنائے جانے کے بعد یمن میں انسانی بحران میں شدت پیدا ہوئی ہے۔ ایمنسٹی انٹرنیشنل کے ججوں کا کہنا ہے کہ دستیاب اطلاعات کے مطابق برطانوی حکومت نے سعودی عرب کو فوجی ساز و سامان فروخت کر کے اسلحے کی برآمدات سے متعلق اپنے وعدوں، یورپی یونین کے مشترکہ موقف اور اسلحے کی تجارت کے معاہدے کی خلاف ورزی کی ہے۔ اس کے باوجود برطانوی حکومت اس بات کی دعویدار ہے کہ اس نے سعودی عرب کو جو ہتھیار فراہم کئے ہیں وہ یمن کے خلاف جنگ میں استعمال نہیں کئے جا رہے ہیں جبکہ ایمنسٹی انٹرنیشنل اور سیفر ورلڈ نامی این جی او نے کہا ہے کہ یمن پر سعودی عرب کے حملے شروع ہونے کے بعد برطانوی حکومت نے ایک اعشاریہ پچھتر ارب پونڈ سے زیادہ مالیت کے ہتھیار سعودی عرب بھیجنے کے لئے سو سے زیادہ اجازت نامے منظور کئے۔ واضح رہے کہ برطانیہ نے سعودی عرب کو جو فوجی سازو سامان دیا ہے اس میں اس ملک کی فضائیہ کو دیئے جانے والے لڑاکا طیارے اور ایئربم بھی شامل ہیں۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2018 Sep 24