Tuesday - 2018 Sep 18
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 89590
Published : 19/12/2015 14:7

نائیجیریا میں شیعہ مسلمانوں کے قتل عام کے خلاف ایران بھر میں مظاہرے

نائیجیریا میں شیعہ مسلمانوں کے قتل عام کے خلاف ایران بھر میں مظاہرے کئے گئے۔

تہران سمیت ایران کے تمام صوبائی دارالحکومتوں اور چھوٹے بڑے شہروں میں لوگوں نے نماز جمعہ کے بعدجلوس نکالے اور نائیجیریا میں فوج کے ہاتھوں شیعہ مسلمانوں کے قتل عام کی مذمت کی۔

مظاہرین نے نائیجیریا کی فوج کے اس اقدام کو وحشیانہ اور انسانیت کے خلاف جرم قرار دیا۔ مظاہرین نے اپنے ہاتھوں میں نائیجیریا کے شیعہ رہنما آیت اللہ ابراہیم الزکزکی کی تصاویر اٹھا رکھی تھیں اور ان کی فوری رہائی کا مطالبہ کر رہے تھے۔

مظاہرین کا کہنا تھا کہ نائیجیریا میں شیعہ مسلمانوں کے قتل عام پر عالمی اداروں اور انسانی حقوق کے دعویداروں کی خاموشی انتہائی شرمناک ہے۔ مظاہرین نے عالمی اداروں سے مطالبہ کیا کہ وہ نائیجیریا میں فوج کے ہاتھوں شیعہ مسلمانوں کے قتل عام پر اپنی خاموشی توڑیں اور اس واقعے کی تحقیقات کر کے مجرموں کو قرار واقعی سزا دلوائیں۔

مظاہرین نے اپنے ہاتھوں میں ایسے پلے کارڈ اٹھا رکھے تھے جن پر نائیجیر کی فوج کے وحشیانہ اقدامات کے خلاف نعرے درج تھے ۔ مظاہرین امریکہ ، صیہونی حکومت اور تکفیری دہشت گرد گروہوں کی حمایت کرنے والے ملکوں کے خلاف بھی نعرے لگار ہے تھے۔

تہران کے علاوہ قم ، مشہد، اصفہان ، زنجان، شیراز اور بندر عباس سمیت ایران کے سبھی شہروں سے ایسے ہی مظاہروں کی خبریں موصول ہوئی ہیں۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Tuesday - 2018 Sep 18