Friday - 2019 January 18
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 90008
Published : 26/12/2015 5:11

ایران کی منڈی میں داخل ہونے کے لیے امریکہ کی بڑی کمپنیاں بے چین

امریکی اخبار وال اسٹریٹ جرنل نے رپورٹ دی ہے کہ ایران پر عائد پابندیوں کے خاتمے سے قبل ہی ایچ پی اور جنرل الیکٹرک سمیت بڑی بڑی امریکی کمپنیاں ایران کی منڈی میں داخل ہونے کے راستے کا بھرپور طریقے سے جائزہ لے رہی ہیں۔

ارنا کی رپورٹ کے مطابق اخبار وال اسٹریٹ جرنل نے لکھا ہے کہ گزشتہ ہفتے میری لینڈ سے تعلق رکھنے والے سینیٹر بن کارڈین اور سینیٹ کی خارجہ تعلقات کمیٹی کے ایک سینیئر ڈیموکریٹ رکن نے ایک جائزہ اجلاس میں کہا ہے کہ ایران کے ساتھ بڑی طاقتوں کے ایٹمی معاہدے پر عمل درآمد کے بعد جنوری کے مہینے میں تہران پر عائد پابندیوں میں کمی آنا شروع ہو سکتی ہے۔

ایک امریکی عہدیدار نے کہا ہے کہ معاہدے پر عمل درآمد کے روز امریکی وزارت خزانہ کا غیرملکی اثاثوں کو کنٹرول کرنے کا شعبہ ایک عام اجازت نامہ جاری کرے گا کہ جس میں امریکی کمپنیوں کو ایران کے ساتھ کام کرنے کی اجازت دی جائے گی۔

بعض امریکی کمپنیاں اس بات کے خوف سے کہ کہیں وہ ایران جیسی بڑی منڈی میں اپنے یورپی اور ایشیائی حریفوں سے رقابت میں پیچھے نہ رہ جائیں، اپنے آپ کو آمادہ کر رہی ہیں کہ ایران پر عائد پابندیاں ختم ہوتے ہی ایران کی منڈی میں داخل ہو جائیں اور اپنے نمائندوں کو معاہدے کرنے کے لیے ایران بھیجیں۔

اخبار وال اسٹریٹ جرنل نے مزید لکھا ہے کہ ایران کے وزیر پیٹرولیم بیژن نامدار زنگنہ نے کہا ہے کہ ایران کو، نئے اور پرکشش معاہدے پیش کیے جانے کے بعد تیل اور گیس کے شعبوں میں تیس ارب ڈالر کی سرمایہ کاری کی توقع ہے۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Friday - 2019 January 18