Sunday - 2018 Nov 18
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 91326
Published : 13/1/2016 11:54

ایران اور پاکستان کے درمیان سرحدی تعاون کا فروغ

ایران اور پاکستان نے گوادر اور چابہار کو ملانے کے لئے ریلوے لائن بچھانے پر اتفاق کیا ہے۔ اس بات کا اعلان ایران کے صوبہ سیستان و بلوچستان کے گورنر علی اوسط ہاشمی نے پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے دورے سے واپسی پر ہمارے نمائندے سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔ صوبہ سیستان و بلوچستان کے گورنر کی قیادت میں بائیس رکنی ایرانی وفد نے کوئٹہ میں پاکستان کے صوبے بلوچستان کے وزیراعلی ثناءاللہ زہری سے ملاقات کی۔ ملاقات میں سرحدی تجارت، نئی شپنگ سروس شروع کرنے سے متعلق منصوبوں کا بھی جائزہ لیا گیا۔ علی اوسط ہاشمی کا کہنا تھا کہ انہوں نے پاکستانی حکام کے ساتھ سرحدی سیکورٹی، منشیات کی اسمگلنگ اور سرحد پار سے غیر قانونی آمد و رفت سمیت مختلف دیگر امور پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا۔ انہوں نے کہا کہ سرحدی سیکورٹی اور متعلقہ معاملات پر نظر رکھنے کے لئے کمیٹی قائم کردی گئی ہے۔ دونوں ممالک کے درمیان سرحدی معاملات کی نگرانی کے لئے بارڈر کمیشن پہلے ہی تشکیل دیا جا چکا ہے۔ علی اوسط ہاشمی نے مزید کہا کہ ایران نے پاکستان کے مکران ڈویژن کو فراہم کی جانے والی بجلی میں تیس میگاواٹ تک اضافہ کرنے پر آمادگی ظاہر کر دی ہے۔ قابل ذکر ہے کہ ایران اس وقت پاکستان کے مکران ڈویژن کو سات میگاواٹ بجلی فراہم کر رہا ہے۔ جبکہ پاکستان کے نیشنل گارڈ کے لئے ایران، ایک ہزار میگاواٹ بجلی الگ سے فراہم کرتا ہے۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Sunday - 2018 Nov 18