دوشنبه - 2019 مارس 25
ہندستان میں نمائندہ ولی فقیہ کا دفتر
Languages
Delicious facebook RSS ارسال به دوستان نسخه چاپی  ذخیره خروجی XML خروجی متنی خروجی PDF
کد خبر : 91349
تاریخ انتشار : 13/1/2016 18:18
تعداد بازدید : 7

سعودی عرب کی قیادت والے اتحاد میں پاکستان کی محدود پیمانے پر شرکت

پاکستانی وزیر اعظم کے مشیر برائے خارجہ امور سرتاج عزیز نے کہا ہے کہ ان کا ملک سعودی عرب کی قیادت میں تشکیل پانے والے اتحاد کے دائرۂ کار میں کسی بھی ملک میں اپنے فوجی نہیں بھیجے گا۔

ڈان ویب سائٹ کی رپورٹ کے مطابق سرتاج عزیز نے منگل کے دن کہا کہ سعودی عرب کے حکام نے اسلام آباد پر دباؤ ڈالا ہے کہ وہ سعودی عرب کی قیادت میں تشکیل پانے والے اتحاد میں زیادہ شرکت کرے۔ سرتاج عزیز کا کہنا تھا کہ اس اتحاد میں پاکستان کی شرکت فوجی بھیجنے کی سطح پر نہیں ہوگی۔

سعودی عرب کے وزیر خارجہ اور وزیر دفاع پاکستان کا دورہ کر چکے ہیں۔ ان کے دوروں کا مقصد پاکستان پر دباؤ ڈالنا تھا کہ وہ اپنے فوجی سعودی عرب کی قیادت میں تشکیل پانے والے اتحاد میں شامل کرے۔ سعودی عرب نے حال ہی میں چونتیس ممالک کے ایسے اتحاد کی قیادت کا دعوی کیا ہے جس کا مقصد دہشت گردی کا مقابلہ کرنا بتایا گیا ہے۔ لیکن اس کے باوجود پاکستان جیسے ممالک اس اتحاد میں ٹریننگ اور مشاورت دینے سے زیادہ کردار ادا کرنے کا ارادہ نہیں رکھتے ہیں۔

اسلام آباد اس سے پہلے بھی یمن پر حملوں میں شرکت پر مبنی ریاض کی دراخواست کو مسترد کر چکا ہے۔ اس کے علاوہ سعودی عرب کی قیادت والے اتحاد میں پاکستان کی شرکت کی پاکستان کے اندر بھی وسیع پیمانے پر مخالفت کی گئی ہے۔


نظر شما



نمایش غیر عمومی
تصویر امنیتی :