Friday - 2018 Nov 16
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 91375
Published : 14/1/2016 18:54

پاکستان میں جیش محمد کے دفاتر سیل کر دیئے گئے

پٹھان کوٹ ایر بیس پر حملے سے متعلق ہندوستان کی طرف سے پاکستان کو فراہم کی گئیں معلومات کی روشنی میں پاکستان میں دہشت گرد تنظیم جیش محمد کے دفاتر سیل کر دیئے گئے۔

پاکستان کے وزیراعظم کے دفتر سے جاری ہونے والے بیان میں کہا گیا ہے کہ نوازشریف کی صدارت میں عسکری اور سیاسی قیادت کا ایک اعلی سطحی اجلاس ہوا جس میں پٹھان کوٹ ایر بیس حملے کی تحقیقات کے نتیجے میں کالعدم تنظیم جیش محمد کے متعدد افراد کی گرفتاری کی تصدیق کی گئی۔

اجلاس میں پاکستانی فوج کے سربراہ جنرل راحیل شریف، آئی ایس آئی کے سربراہ جنرل رضوان اختر، پاکستان کے وفاقی وزرائے داخلہ و خزانہ چودھری نثار علی و اسحاق ڈار، مشیرخارجہ سرتاج عزیز اور وزیر اعلی پنجاب شہباز شریف نے شرکت کی۔

اجلاس میں پٹھان کوٹ ایر بیس پر حملے کے بعد پیدا ہونے والی صورت حال کا جائزہ لیا گیا۔ اجلاس میں کہا گیا کہ پٹھان کوٹ ایر بیس حملے سے متعلق تحقیقات میں پیشرفت ہوئی ہے اور جیش محمد کے متعدد افراد کو گرفتار کر کے تنظیم کے کئی دفاتر کو سیل کر دیا گیا ہے۔ اجلاس میں پاکستان کی خصوصی تحقیقاتی ٹیم پٹھان کوٹ بھیجنے اور اس سلسلے میں ہندوستانی حکومت کے ساتھ مشاورت کا بھی فیصلہ کیا گیا۔

پاکستانی وزیراعظم کی صدارت میں ہونے والے اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ ہندوستان کے ساتھ دہشت گردی کے مکمل خاتمے اور دیگر امور پر رابطہ برقرار رکھا جائے گا۔

واضح رہے کہ دوہفتے قبل پاکستانی سرحد سے پچاس کلومیٹر کے فاصلے پر ہندوستان کے سرحدی شہر پٹھان کوٹ میں ایر بیس پر دہشت گردوں نے حملہ کر دیا تھا جس کے خلاف ہندوستانی فوج کا آپریشن چار روز تک جاری رہا۔ ہندوستان نے اس حملے کے بارے میں معلومات پاکستان کو پیش کرتے ہوئے کہا تھا کہ حملہ آور، پاکستان کے صوبہ پنجاب سے آئے تھے اور ان کا تعلق کالعدم تنظیم جیش محمد سے تھا۔

اس دہشت گردانہ حملے میں سات ہندوستانی فوجی اور سبھی چھے حملہ آور دہشت گرد ہلاک ہو گئے تھے۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Friday - 2018 Nov 16