يکشنبه - 2019 مارس 24
ہندستان میں نمائندہ ولی فقیہ کا دفتر
Languages
Delicious facebook RSS ارسال به دوستان نسخه چاپی  ذخیره خروجی XML خروجی متنی خروجی PDF
کد خبر : 91448
تاریخ انتشار : 16/1/2016 10:3
تعداد بازدید : 13

یمن پر جاری جارحیت پر عالمی ریڈ کراس کی تشویش

عالمی ریڈ کراس کمیٹی کے حکام کا کہنا ہے کہ یمن پر سعودی عرب کے حملے جاری رہنے سے اس بات کا اندیشہ پیدا ہو گیا ہے کہ اس ملک کی افسوسناک صورتحال کہیں فراموش نہ کر دی جائے۔

عالمی ریڈکراس کمیٹی کے مشرق وسطی کے شعبے میں علاقائی امور کے ڈائریکٹر رابرٹ ماردینی نے کہا ہے کہ یمن تیزی کے ساتھ ایک فراموش کر دیئے جانے والے بحران میں تبدیل ہو رہا ہے۔

اس درمیان یمن میں انسان دوستانہ امور سے متعلق ریڈاکراس کمیٹی کی انچارج مونیکا آرپاگوس نے بھی اس صورت حال پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ یمن کے اسپتال اب محفوظ نہیں رہے ہیں۔

سعودی عرب کے لڑاکا طیاروں نے پچھلے چند روز کے دوران یمن میں دو اسپتالوں پر حملے کئے ہیں۔ پچھلے اتوار کو شمالی صوبے صعدہ میں سعودی طیاروں نے ڈاکٹروں کی عالمی تنظیم کے ایک اسپتال پر حملہ کیا تھا جس میں کم سے کم چار افراد جاں بحق ہو گئے تھے جبکہ پیر کو بھی صوبے بیضا میں ایک سرکاری اسپتال کو سعودی جنگی طیاروں نے نشانہ بنایا تھا۔ اس سے پہلے نومبر کے مہینے میں بھی سعودی بمبار طیاروں نے ڈاکٹروں کی عالمی تنظیم کے ایک اسپتال پر حملہ کیا تھا۔

عالمی ریڈکراس کمیٹی کی عہدیدار مونیکا آرپاگوس نے کہا کہ یمن کے اسپتالوں پر سعودی عرب اور اس کے اتحادیوں نے کئی بار ہوائی حملے کئے ہیں جن کے نتیجے میں بہت سے مریض جاں بحق ہوئے ہیں۔ سعو دی عرب گذشتہ سال چھبیس مارچ سے یمن پر ہوائی بحری اور زمینی حملے کر رہا ہے۔

سعودی جارحیت میں اب تک ہزاروں یمنی شہری شہید اور زخمی ہوچکے ہیں جبکہ یمن کی بہت سی بنیادی اور شہری تنصیبات تباہ ہو چکی ہیں۔


نظر شما



نمایش غیر عمومی
تصویر امنیتی :