Saturday - 2018 August 18
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 91748
Published : 19/1/2016 12:8

خطے میں عدم استحکام کی وجہ امریکی پالیسیاں ہیں

پاکستان نے امریکی پالیسیوں کو خطے کے عدم استحکام کی وجہ قرار دیا ہے۔ پاکستانی ذرائع کے مطابق وزیر اعظم نواز شریف کے مشیر برائے امور خارجہ سرتاج عزیز نے سینٹ میں پالیسی بیان دیتے ہوئے کہا ہے کہ امریکی پالیسیاں جنوبی ایشیا میں عدم استحکام کا باعث بنی ہیں۔ سرتاج عزیز کا کہنا تھا کہ صدر اوباما کا خطاب حقائق کے منافی ہے اور خطے میں عدم استحکام کی وجہ خود امریکی پالیسیاں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ خطے سمیت پوری دنیا میں دہشت گردی بڑھ رہی ہے اس لئے اوباما کے خدشات کی کچھ اور وجوہات بھی ہو سکتی ہیں۔ سرتاج عزیز نے یہ بات زور دیکر کہی کہ ہمیں امریکی صدر کو یہ بتانے کی ضرورت ہے کہ ان کی پیش گوئیاں درست نہیں ہیں۔ انہوں نے اعتراف کیا کہ پاکستان اور امریکا نے مل کر روس کے خلاف افغان مجاہدین کو تربیت دی لیکن جب بقول ان کے عسکریت پسند خطرہ بنے تو پالیسی تبدیلی کرنا پڑی۔ انہوں نے سینٹ کو بتایا کہ پاکستان نے اب کسی کی لڑائی میں نہ کودنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔ پاکستان کے مشیر خارجہ نے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف آپریشن ضرب عضب کامیاب رہا ہے اور سن دو ہزار چودہ کے مقابلے میں سن دو ہزار پندرہ میں دہشت گردی کے واقعات میں نمایاں کمی آئی ہے۔ قابل ذکر ہے کہ امریکی صدر بارک اوباما نے گزشتہ ہفتے قوم سے اپنے آخری خطاب میں القاعدہ اور داعش کو امریکی عوام کے لئے براہ راست خطرہ قرار دیتے ہوئے کہا تھا کہ افغانستان اور پاکستان میں عدم استحکام کا خدشہ کئی دہائیوں تک باقی رہے گا۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Saturday - 2018 August 18