چهارشنبه - 2019 مارس 20
ہندستان میں نمائندہ ولی فقیہ کا دفتر
Languages
Delicious facebook RSS ارسال به دوستان نسخه چاپی  ذخیره خروجی XML خروجی متنی خروجی PDF
کد خبر : 93427
تاریخ انتشار : 23/1/2016 17:8
تعداد بازدید : 9

شام میں روسی امدادی طیاروں کو نشانہ بنائے جانے کے خدشے کا اظہار

روس نے شام میں اپنے امدادی طیاروں کو نشانہ بنائے جانے کا خدشہ ظاہر کیا ہے۔
روسی وزارت دفاع کے ترجمان بریگیڈیئر ایگور کوناشن کوف نے کہا ہے کہ شام میں دہشت گردوں کے پاس زو تئیس جیسے طاقتور اینٹی ایئر کرافٹ سسٹم موجود ہیں ۔انہوں خدشہ ظاہر کیا ہے کہ شام میں سرگرم دہشت گرد گروہ چار ہزار میٹر کی بلندی پر پرواز کرنے والے روسی ٹرانسپورٹ طیاروں کو نشانہ بناسکتے ہیں۔ادھر روس کی ایمرجنسی کی وزارت نے بتایا ہے کہ اس نے جنوری دو ہزار تیرہ سے اب تک تیس امدادی پروازیں شام اور اس کے ہمسایہ ممالک بھیجی ہیں جن میں اردن اور لبنان جیسے ممالک شامل ہیں۔ روس اب تک شام کے مختلف علاقوں میں دہشت گردوں کے حملوں سے متاثر ہونے والوں کے لیے چھے سو ٹن امدادی اشیاء شام بھیج چکا ہے۔ قابل ذکر ہے کہ مغرب اور اس کے علاقائی اتحادیوں کے حمایت یافتہ دہشت گرد گروہوں نے پچھلے پانچ سال سے شام میں بدامنی پھیلا رکھی ہے جس کا مقصد صدر بشار اسد کی قانونی حکومت کو ختم کرکے مغرب نواز حکومت کو برسراقتدار لانا ہے جس کے اسرائیل کے ساتھ قریبی تعلقات قائم ہوں ۔


نظر شما



نمایش غیر عمومی
تصویر امنیتی :