Monday - 2018 Oct. 15
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 188241
Published : 6/7/2017 17:55

کھیروں کا زیادہ استعمال بھی نقصان دہ ہوسکتا ہے

تحقیق کے مطابق یہ پروٹین معدے کے لیے بھی نقصان دہ ہے اور مختلف مسائل کا باعث بن سکتا ہے جبکہ یاداشت کی ممکنہ محرومی کا خطرہ بھی بڑھاتا ہے،تحقیق کے دوران خون کے مختلف گروپس پر اس پروٹین کے اثرات کا جائزہ لیا گیا اور محققین کا کہنا تھا کہ لیسٹینز دماغی امراض میں کردار ادا کرتا ہے،انہوں نے بتایا کہ یہ پروٹین لوگوں پر مختلف طریقوں سے اثرانداز ہوکر دماغی صحت کو نقصان پہنچاتا ہے۔


ولایت پورٹل:اگر  آپ روزانہ کھیرے بہت زیادہ کھانے کے عادی ہیں تو یہ آپ کی دماغی صحت کے لیے نقصان دہ ثابت ہوسکتا ہے،یہ انتباہ امریکا میں ہونے والی ایک طبی تحقیق میں سامنے آیا،تحقیق میں بتایا گیا کہ ٹماٹر، آلو اور کھیروں کا بہت زیادہ استعمال صحت کے لیے نقصان دہ  ہوسکتا ہے،کیلیفورنیا سے تعلق رکھنے والے ہارٹ سرجن ڈاکٹر اسٹیون گیونڈری نے تحقیق کے دوران بتایا کہ ان تینوں میں ایک پروٹین لیسٹینز پایا جاتا ہے جس کا تعلق الزائمر اور ڈیمینیشا جیسے دماغی امراض سے دریافت کیا گیا ہے،تحقیق کے مطابق یہ پروٹین معدے کے لیے بھی نقصان دہ ہے اور مختلف مسائل کا باعث بن سکتا ہے جبکہ یاداشت کی ممکنہ محرومی کا خطرہ بھی بڑھاتا ہے،تحقیق کے دوران خون کے مختلف گروپس پر اس پروٹین کے اثرات کا جائزہ لیا گیا اور محققین کا کہنا تھا کہ لیسٹینز دماغی امراض میں کردار ادا کرتا ہے،انہوں نے بتایا کہ یہ پروٹین لوگوں پر مختلف طریقوں سے اثرانداز ہوکر دماغی صحت کو نقصان پہنچاتا ہے، تاہم ایسا اس صورت میں ہوتا ہے جب ان کا حد سے زیادہ استعمال کیا جائے،تحقیق کے مطابق یہ پروٹین ہضم ہونے کے بعد جسم، دفاعی نظام اور بلڈ لیول مین تبدیلیاں لاتا ہے اور انسولین ریسیپٹرز بلاک کرسکتا ہے جبکہ طویل المعیاد بنیادوں پر خون کی شریانوں پر بھی اثرانداز ہوسکتا ہے،محققین نے بتایا کہ یہ پروٹین غذائیت جذب ہونا روک دیتا ہے جس سے مسائل پیدا ہوتے ہیں۔
اعتماد


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2018 Oct. 15