Tuesday - 2018 Oct. 23
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 190858
Published : 12/12/2017 9:19

بیت المقدس کی قانونی حیثیت کا تحفظ ضروی ہے:مصری صدر

مصری صدر نے امریکی صدر کے بیان پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ٹرمپ کو کوئی ایسا کام نہیں کرنا چاہیئے جس سے خطہ کے حالات مزید پیچیدہ صورت اختیار کرجائیں۔


ولایت پورٹل:رپورٹ کے مطابق روس کے صدر ولادمیر پوٹین نے کل مصر کا دورہ کیا اور اپنے ہم منصب مصری صدر عبد الفتاح السیسی سے ملاقات کے بعد قاہرہ میں منعقد ایک مشترک پریس کانفرنس کو  بھی خطاب کیا جس میں دونوں رہنماؤں نے خطہ کی جدید صورتحال پر تبصرہ کیا اور اس ملاقات میں بیت المقدس کا مسئلہ سرفہرست تھا۔
مصر کے صدر السیسی نے ٹرمپ کے اس فیصلہ کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ قدس کی قانونی حیثیت اور ساکھ کہ جو بین الاقوامی قوانین کا حصہ ہے اس کی حفاظت ہر حال میں ضروری ہے۔
یاد رہے کہ ۶ دسمبر کو امریکی صدر ٹرمپ نے ایک طرفہ قضاوت کرکے امت مسلمہ کے حقوق کو پیروں تلے روندتے ہوئے یروشلم کو غاصب اسرائیل کے جدید دارالحکومت کے طور پر اعلان کرتے ہوئے اپنے سفارتی عملہ کو تل ابیب سے بیت المقدس منتقل کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔
رپورٹ کے مطابق مصری صدر نے امریکی صدر کے بیان پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ٹرمپ کو کوئی ایسا کام نہیں کرنا چاہیئے جس سے خطہ کے حالات مزید پیچیدہ صورت اختیار کرجائیں۔
السیسی نے پوٹین کے ساتھ اس ملاقات کو دونوں ممالک کے مستقبل کے لئے مثبت قرار دیا اور کہا کہ یہ ملاقات دونوں ممالک کے درمیان اقتصادی،صنعتی اور تجارتی و تفریحی تعلقات کے فروغ کا باعث ہوگی۔
یاد رہے کہ روسی صدر کل بروز پیر قاہرہ پہونچے جہاں انھوں نے مصری صدر سے ملاقات کی اور اس سے پہلے وہ شام گئے تھے جہاں انھوں نے شامی صدر بشار اسد کے ساتھ ملاقات کرکے روسی افواج کے کچھ دستوں کو شامی سرزمین چھوڑنے کا حکم دیا تھا، اور پھر کل ہی پوٹین مصر سے ترکی روانہ ہوگئے کہ جہاں وہ اردغان سمیت اعلٰی ترک حکام سے ملاقات و گفتگو کریں گے۔

پارس ٹوڈے



آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Tuesday - 2018 Oct. 23